کرد باغیوں پر حملہ غیرملکی طاقتوں کو انتباہ کے لیے تھا، پاسدارانِ انقلاب ایران

  جمعہ‬‮ 14 ستمبر‬‮ 2018  |  12:20

تہران(انٹرنیشنل ڈیسک)سپاہِ پاسداران انقلاب ایران نے کہا ہے کہ گذشتہ ہفتے پڑوسی ملک عراق میں کرد باغیوں کے ٹھکانے پر میزائل حملہ طاغوتی غیرملکی طاقتوں کے لیے ایک انتباہ سمجھا جانا چاہیے۔سپاہِ پاسداران انقلاب کے کمانڈر میجر جنرل محمد علی جعفری نے نیم سرکاری خبررساں ایجنسی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 2000 کلومیٹر تک مار کرنے والے میزائلوں سے ایرانی قوم کو جابر غیرملکی طاقتوں کے خلاف لڑنے کی منفرد صلاحیت حاصل ہوگئی ہے۔انھوں نے دھمکی آمیز لہجے میں کہا کہ جن غیرملکی طاقتوں کی ایران کی سرحدوںسے دو ہزار کلومیٹر نصف قطر میں مسلح افواج ،فوجی اڈے اور

آلات موجود ہیں، انھیں جان لینا چاہیے کہ ہمارے میزائل ہدف کو ٹھیک ٹھیک نشانہ بنانے کی صلاحیت کے حامل ہیں۔ایرانی حکام ایک عرصے سے امریکا کو ایک عالمی طاغوت قرار دیتے چلے آ رہے ہیں اور ان کا کہنا تھا کہ خلیج اور اس سے ماورا امریکا کے فوجی اڈے پاسداران انقلاب کے درمیانے فاصلے تک مار کرنے والے میزائلوں کی زد میں ہیں۔جنرل جعفری کا کہنا تھا کہ دہشت گردوں کے خلاف ہماری حالیہ کارروائی میں دشمنوں کے لیے ایک بڑا واضح پیغام تھا ۔بالخصوص ان بڑی طاقتوں کے لیے جن کا یہ خیال ہے کہ وہ ہمیں ڈرا دھمکا سکتے ہیں ۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں