شرمناک شکست کے بعد پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کوچ باب وولمر کو قتل کیا گیا یا طبعی موت تھی؟ بالآخر حقیقت سامنے آ ہی گئی، حیرت انگیز انکشافات

  بدھ‬‮ 13 ستمبر‬‮ 2017  |  22:14

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) باب وولمر کی طبعی موت کو قتل قرار دینے کی کوشش کی گئی، تفصیلات کے مطابق پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کوچ باب وولمر کی موت کی تحقیقات کو غلط رنگ دینے کی تصدیق ہوگئی ہے۔ ایک قومی روزنامہ کے مطابق اس وقت کے جمیکا کے ڈائریکٹر آف پبلک پراسیکیوشن (ڈی پی پی)کینٹ پانترے ان کی موت کو قتل قرار دینے میں براہ راست ملوث تھے۔ کینٹ پانترے نے طبعی موت کو قتل کا رخ دینے کی کوشش کی اور اس سلسلے میں اسٹیٹ پیتھولوجسٹ ڈاکٹر ایر سیشاہنے بہت اہم کردار ادا کیا۔ باب وولمر کی

پوسٹ مارٹم رپورٹ سراسر غلط تھی جس کا بعد میں برطانوی ماہرین نے راز فاش کر دیا، پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کوچ باب وولمر کی موت کو 10 برس بیت چکے ہیں اور تحقیقات کی تفصیلات یہ بات سامنے آئی ہے کہ مقامی حکام نے جان بوجھ کر بابا وولمر کی طبعی موت کو قتل کا رخ دینے کی کوشش کی تھی اور اس حرکت پر پانترے کو شدید تنقید کا نشانہ بھی بنایا گیا ہے۔ ان تحقیقات کے بعد واضح ہو گیا ہے کہ باب وولمر کی موت قتل نہیں بلکہ طبعی تھی۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں