نواز شریف حکومت کو کبھی تاوان ادا نہیں کریں گے یہ غیر آئینی غیر قانونی ہے،ن لیگ نے دوٹوک اعلان کردیا

  جمعہ‬‮ 15 ‬‮نومبر‬‮ 2019  |  22:41

اسلام آباد (آن لائن) مسلم لیگ ن کے رہنما مصدق ملک نے کہا ہے کہ نواز شریف حکومت کو کبھی تاوان ادا نہیں کریں گے کیونکہ وہ سمجھتے ہیں کہ یہ غیر آئینی اور غیر قانونی ہے، جب عدالتیں نواز شریف کو ضمانتیں دے چکی ہیں تو پھر حکومت شرائط غیر قانونی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ مصدق ملک نے کہا کہ شیورٹی بانڈز جمع کرانے سے متعلق تو فیصلہ میاں نواز شریف نے کرنا ہےاور حکومت نے جو بانڈز کی شرط رکھی ہے وہ غیر قانونی اور غیر آئینی ہے


اس کی آئین پاکستان میں کوئی گنجائش نہیں جب عدالتیں نواز شریف کو ضمانت دے چکی ہین تو پھر حکومت ضمانت اور گارنٹی کس چیز کی مانگ رہی ہے اور عدالت کے ایک فیصلے میں لکھا جا چکا ہے کہ نواز شریف جہاں چاہیں علاج کراسکتے ہیں اگر نواز شریف ضمانت کے مقررہ وقت میں عدالت یا پاکستان نہیں پہنچتے تو عدالت کے پاس نواز شریف کو طلب کرنے کا بھی طریقہ موجود ہے۔ اگر وہ پاکستان نہیں آتے تو عدالت ان کو اشتہاری قرار دے سکتی ہے اور ان کی تمام پراپرٹی ضبط کر سکتی ہے یہی آئینی اور قانونی طریقہ کا رہے، مگر حکومت ایسی شرائط عائد کر کے شاید این آر او دینا چاہتی ہے اور حکومت کہتی ہے کہ ہم آپ کو این آر او دے رہے ہیں اور آپ این آر او پر سائن کر دیں مگر این آر او کی اجازت ہمار ا آئین نہیں دیتا، حکومت نے ہمیشہ سے این آر او دینے کی کو شش کی مگر ہم نے این آر او سے انکار کیا، نواز شریف کی جب جان ہتھیلی پر ہے تب بھی وہ کہہ رہے ہیں کہ مجھے کسی این آر او کی ضرورت نہیں، یہ نواز شریف کا فیصلہ ہے انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے دوست احباب اور پارٹی کے لوگ ان کو کہہ رہے ہیں کہ آپ حکومت کو بانڈز دے دیں اور آپ اپنی جان بچانے اور علاج کرانے کے لئے بیرون ملک چلے جائیں مگر نواز شریف کہتے ہیں کہ وہ تاوان ادا نہیں کریں گے اور یہ غیر آئینی اقدام ہے جو ہم نہیں کریں گے، تاوان وصول کرنے کا اختیار حکومت کے پاس نہلیں ہے ان کے پاس یہ اختیار ہے کہ وہ نام ای سی ایل سے نکالیں مگر یہ ایسا نہیں کر رہے، بھارتی کشمیر میں ہماری ماؤ ں، بہنوں کی عزتیں لوٹ رہے ہیں مگر ہم ان کے لئے کرتارپور کھول رہے ہیں اور کرتا پور کی گردانیں پڑھ رہے ہیں کیا یہ ہے حکومت کی کشمیر پالیسی؟

loading...