جی ایچ کیو میں آرمی چیف نے وزیراعظم کو کہا کہ ۔۔ جنرل باجوہ نےعمران خان کو کیا یقین دہانی کرادی ، دونوں کے درمیان کیا باتیں ہوتی رہیں، تفصیلات سامنے آگئیں

  جمعہ‬‮ 31 اگست‬‮ 2018  |  12:39

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)آرمی چیف نے وزیراعظم کو کہا کہ پاک آرمی حکومت کے ماتحت ادارہ ہے، حکومت جو بھی پالیسی بنائے گی فوج اس پر عملدرآمد کی پابند ہے، عسکری و سول قیادت نہ صرف ایک پیج پر بلکہ ایک ہی کتاب پڑھ رہی ہے، چین کیساتھ سی پیک معاہدہ جیو سٹریٹجک نہیں بلکہ جیو اکنامکل ہے جس کو ہر صورت مکمل کیا جائے گا، گستاخانہ خاکوں کے مقابلےکے ہالینڈ میں انعقاد کے معاملے پر رات کو پاکستان کو بڑی سفارتی کامیابی حاصل ہوئی ہے، ہالینڈ کی حکومت نے پاکستان اور عالم اسلام کے موقف کو تسلیم کیا ہے، وفاقی


وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کی میڈیا سے گفتگو۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان کے دورہ جی ایچ کیو کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ آرمی چیف نے وزیراعظم کو کہا ہے کہ پاک آرمی حکومت کے ماتحت ادارہ ہے اور حکومت جو بھی پالیسی بنائے گی فوج اس پر عملدرآمد کی پابند ہے۔ فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ جی ایچ کیو میں حساس معاملات پر بریفنگ دی گئی ہے جن میں خطے کی صورتحال اور بین الاقوامی تبدیلیوں کے حوالے سے بھی وزیراعظم اور ان کے ہمراہ وزرا کو آگاہ کیا گیا ہے ۔ فواد چوہدری کا کہنا تھا عسکری و سول قیادت نہ صرف ایک پیج پر ہے بلکہ ایک ہی کتاب بھی پڑھ رہی ہے۔ انہوں نےکہا کہ چین کے پاکستان میں بے پناہ معاشی فوائد ہیں اور پاکستان میں آنیوالی حکومت سی پیک معاہدے کو ہر صورت مکمل کرنے کا عزم رکھتی ہے۔ سی پیک معاہدہ جیو اسٹریٹجک معاہدہ نہیں بلکہ جیو اکنامکل معاہدہ ہے۔ تحریک انصاف کی حکومت جاپان کیساتھ مختلف شعبوں میں تعاون کا بھی فروغ چاہتی ہے ۔ ہالینڈ میں گستاخانہ خاکوں کے مقابلے کے انعقاد کی منسوخی پر بات کرتے ہوئےفواد چوہدری کا کہنا تھا کہ رات پاکستان کو سفارتی سطح پر بڑی کامیابی ملی اور ہالینڈ میں گستاخانہ خاکوں کے مقابلے کی منسوخی پاکستان اور عالم اسلام کی فتح ہے۔ ہالینڈ کی حکومت نے نہ صرف پاکستانی مؤقف کو تسلیم کیا ہے بلکہ اس حوالے سے کردار اداکرتے ہوئے ان مقابلوں کا انعقاد بھی رکوایاہے۔

موضوعات:

loading...