پاکستان میں پورنو گرافی سکینڈل سے متعلق اب تک کی بڑی خبر۔۔زینب کا قاتل عمران کسی مافیا کا حصہ تھا یا اکیلا ؟ بالآخرپوری حقیقت پاکستانی عوام کے سامنے آگئی

  جمعرات‬‮ 8 فروری‬‮ 2018  |  15:01

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)قصور کی ننھی زینب سمیت دیگر کمسن بچیوں کے قاتل عمران سے متعلق قصور کے ڈی پی او زاہد مروت نے نجی ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ عمران کے چائلڈپورنو گرافی کے بین الاقوامی گروہ کے ساتھ منسلک ہونے کا کوئی بھی ثبوت تفتیش میں سامنے نہیں آسکا۔ ان کا کہنا تھا کہ عمران اکیلا ہی بچیوں سے زیادتی اور ان کے قتل کے واقعات میں ملوث ہے۔ اس موقع پر ڈی پی او زاہد مروتنے قصور میں کمسن بچی کو زیادتی کے بعد قتل کرنے کے الزام میں گرفتار نوجوان مدثر


کی جعلی پولیس مقابلے میں ہلاکت کے حوالے سے بھی بات کرتے ہوئے بتایا کہ مدثر کیس میں دو انسپکٹر زیر حراست ہیں جن سے تحقیقات جاری ہیں۔ واضح رہے کہ قصور میں کمسن بچیوں کے قاتل عمران سے متعلق کہا جا رہا تھا کہ وہ پاکستان میں پیڈو فیلیا مافیا کا رکن ہے جو ڈارک ویب پر کمسن بچوں کی متشدد پورن ویڈیوز فروخت کرتے ہیں۔

موضوعات:

loading...