حکو مت نے اپوزیشن کو دیوار سے لگانے کا عمل مسلسل جاری رکھا ہوا ہے ،چودھری محمد یٰسین

  جمعرات‬‮ 14 ستمبر‬‮ 2017  |  16:25

مظفرآبار(این این آئی)آزادجموں وکشمیر قانون سازاسمبلی کے اپوزیشن لیڈر چودھری محمد یٰسین نے کہاہے کہ حکو مت نے اپوزیشن کو دیوار سے لگانے کا عمل مسلسل جاری رکھا ہوا ہے ۔ بجٹ اجلاس میں حکومت نے اس بات کی گارنٹی دی تھی کہ وہ آئندہ اپوزیشن اراکین اسمبلی کو حکومتی ممبران کے برابر فنڈز دی گی اور ہمارے حلقوں میں کسی بھی ہارے ہوئے شخص کو کوئی فنڈز نہیں دی گی ۔ لیکن حکومت مسلسل اپنے وعدوںسے انحراف کررہی ہے ۔ وہ آج یہاں قانون ساز اسمبلی میں اظہار خیال کررہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ اجلاس میں

حکومت نے ہمارے ساتھ وعدہ کیاتھا کہ اپوزیشن کے تمام ممبران کو حکومتی ممبران کے برابرفنڈز دیں گے ۔ لیکن حکومت نے اپنے وعدے سے انحراف کرتے ہوئے اس باربھی ہارے ہوئے افراد کے ذریعے ترقیاتی فنڈز دئیے جارہے ہیں ۔ جو کہ سراسر ناانصافی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت خود اسمبلی کا ماحول خراب کرناچاہتی ہے ۔ اپوزیشن کی یہ کوشش ہے کہ اسمبلی کا ماحول بہتر رہے ۔ لیکن حکومت اپنے پاؤں پر خود کلہاڑی ماررہی ہے، انہوں نے کہا کہ حکومت کی کابینہ کمیٹی نے اپوزیشن کے ساتھ جو وعدے کئے تھے ۔ ان وعدوں کو پورا کیاجائے ۔ اور اسمبلی کا ماحول خراب نہ کیاجائے۔ قبل ازیں انہوں نے ایک قرارداد کے ذریعے برما میں ہونے والے مظالم کی شدید الفاظ میں مذمت کی ۔ قرارداد میں کہا گیا کہ میانمار میں جاری روہنگیا مسلمانوں کا قتل عام اور ظلم وستم کی داستانیں اب زبان زد عام ہے ۔ برما حکومت کی سرپرستی میں جس طرح مسلمانوں کے علاقوں میں بچوں، خواتین اور مردوں پر ظلم کے پہاڑ توڑے جارہے ہیں اس کی تاریخ میں مثال نہیں ملتی ۔ ایک عالمی انسانی سانحہ کے باوجود عالمی برادری کی خاموشی سوالیہ نشان ہے۔ یہ ایوان مسلمان ودیگر اقلیتوں کے قتل عام کی شدید مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری سے مطالبہ کرتا ہے کہ میانمارکی اقلیتوں پر ہونے والے ظلم وستم کانوٹس لے۔ یہ ایوان اقوام متحدہ، او آئی سی اور دیگر انسانی حقوق کی علمبردار انسانی عالمی تنظیموں سے مطالبہ کرتا ہے کہ میانمار میں انسانی المیے کو روکنے کیلئے اپنااثر ورسوخ استعمال کرے۔ یہ ایوان اپنے مقبوضہ کشمیر کے بھائیوں پرمسلسل غیر انسانی تشدد، قتل اور نسل کشی کی بھی مذمت کرتا ہے اور عالمی برادری سے مطالبہ کرتا ہے کہ اس روش کو ترک کروانے کیلئے اپنا اثر رسوخ استعمال کرے ورنہ ایسے المیے امن کیلئے خدشے بنے رہیں گے۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں