بچھڑے ہوئے کبھی ایسے بھی مل جاتے ہیں ،سوات کا رہائشی35 سال قبل لاپتہ ہونےو الا شخص اچانک گھر پہنچ گیا، گھر والوں پر سکتہ

  پیر‬‮ 20 مارچ‬‮ 2017  |  14:38

سوات (مانیـٹرنگ ڈیسک) سوات میں اپنی نوعیت کا انوکھا واقعہ ، 35سال قبل اپنی شادی کے ایک ہفتے بعد لاپتہ ہونے والا شخص اچانک گھر پہنچ گیا ، اہل خانہ خوشی سے نڈھال۔تفصیلات کے مطابق اپنی شادی کے ایک ہفتہ بعد بہن کو مینگورہ چھوڑنے جانے والا گمشدہ شیر بہادر 35سال بعد اچانک گھر لوٹ آیا۔ اہل خانہ گمشدہ شیر بہادر کو دیکھ کر خوشی سے نڈھال ہو گئے ہیں۔تحصیل چارباغ کے گاؤں کنڈو کا رہائشی شیر بہادر 1982ءمیں 24 سال کی عمر میں لاپتہ ہوگیاتھا جو 35 سال گزرنے کے بعد اب اپنے خاندان والوں کے درمیان پہنچ چکا

ہے۔ شیر بہادر کاکہناہے کہ وہ اپنی بہن کو چھوڑنے مینگورہ گیاتھالیکن اچانک اس کی یاداشت چلی گئی اور وہ اس تمام عرصے کے دوران لاہور کے علاقے بادامی باغ میں مقیم رہا۔اہل خانہ کے درمیان پہنچ کر شیر بہادر کا کہنا ہے کہ وہ اپنے آپ کو جنت میں بیـٹھا محسوس کرتا ہے اوربہت خوش ہے ۔شیر بہادر کے بھائی گل بر خان کاکہناہے کہ بھائی کی تلاش میں ملک کا کونہ کونہ چھان ماراتھا ،بیٹے کےغم میںنڈھال والدہ ہاتھ میں بیـٹے کی تصویر اٹھائے اس کی تلاش میں گھر گھر پھرتی رہیں۔گمشدہ بیٹے کے غم میں نـڈھال بوڑھے والدین اور دو بہنیں بھی انتقال کرگئیں مگر آج ہم بہت خوش ہیں لیکن ماں کی کمی کو محسوس کررہے ہیں۔گمشدہ شیر بہادر کی واپسی پر جہاں اس کے اہل خانہ خوش ہیں وہیں علاقہ میں بھی عید کا سماں محسوس ہو رہا ہے اور علاقہ کے لوگ شیر بہادر کو دیکھنے اور ملنے کیلئے جوق در جوق اس کے گھر آرہے ہیں۔59 سالہ شیر بہادر اپنی جوانی تو یاداشت کے چلے جانے کی وجہ سے بھرپورطریقے سے جی نہیں سکا لیکن اس عمر میں گھر پر واپسی نے اسے اور خاندان والوں کوایک اور زندگی جینے کا موقع ضرور فراہم کردیاہے۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں