ہم نے دہشتگردی کے خلاف جنگ میں۔۔۔ وزیراعظم عمران خان نے پاکستان کے خلاف ہرزا سرائی پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو کھری کھری سنا دیں، کرارا جواب دیدیا

  پیر‬‮ 19 ‬‮نومبر‬‮ 2018  |  16:55

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو پاکستان کے خلاف بیان دینا مہنگا پڑ گیا، پاکستان کے دہشتگردی کے خلاف جنگ میں کردار پر تنقید کرنے پر وزیراعظم عمران خان کھل کر سامنے آگئے، ٹرمپ کو کرارا جواب دیدیا۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے پاکستان کے خلاف بیان پر شدید ردعمل میں امریکی صدر کو کھری کھری سنا دی ہیں۔عمران خان کا کہنا تھا کہ نائن الیون کے حملوں میں کوئی پاکستانی ملوث نہیں ، ہم نے دہشتگردی کے خلاف جنگ میں امریکہ کا ساتھ دیا جبکہ دہشتگردی کے خلاف جنگ میں پاکستان نے 75ہزار جانوں


کی قربانی دی۔ عمران خان نے امریکہ کی جانب سے پاکستان کو دی جانیوالی امداد کے حوالے سے ٹرمپ کے بیان کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ دہشتگردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کو 126ارب ڈالرز کا نقصان برداشت کرنا پڑا ہے جبکہ امریکہ نے پاکستان کو ان سالوں میں صرف 20ارب ڈالرز امداد دی ہے۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز فاکس نیوز کو دئیے گئے ایک انٹرویو میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ پاکستان نے اسامہ کو پناہ دی جبکہ ہمارے لئے کچھ نہیں کیا۔ ہم پاکستان کو ایک ارب 30کروڑ ڈالر کی امداد دے رہے تھے جو کہ اب اس کے روئیے کے بعد بند کر دی ہے ۔ٹرمپ کا کہنا تھا کہ پاکستان کی قربانیوں کو ایک بار پھر نظر انداز کر دیا اور کہا کہ پاکستان نے امریکہ کے لئے کچھ نہیں کیا ،ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ پاکستان نے اسامہ کو پناہ دی جبکہ ہمارے لئے کچھ نہیں کیا۔ ہم پاکستان کو ایک ارب 30کروڑ ڈالر کی امداد دے رہے تھے جو کہ اب اس کے روئیے کے بعد بند کر دی ہے ۔ٹرمپ کا کہنا تھا کہ پاکستان کی قربانیوں کو ایک بار پھر نظر انداز کر دیا اور کہا کہ پاکستان نے امریکہ کے لئے کچھ نہیں کیا ،انہوں نے نے الزام لگایا کہ پاکستان نے اسامہ بن لادن کو پناہ دی، پاکستانی حکام اسامہ کی موجودگی کے بارے میں جانتے تھے ،ہم پاکستان کو سالانہ 1.3 ارب ڈالر دیتے رہے ، انہوں نے کہا کہ پاکستان ہمارے لئے کچھ نہیں کر رہا اس لئے امداد بند کر دی ۔ ‎

موضوعات:

loading...