3قادنیوں کو سزائے موت سنا دی گئی

  جمعرات‬‮ 12 اکتوبر‬‮ 2017  |  10:35

شیخوپورہ،اسلام آباد(آن لائن،مانیٹرنگ ڈیسک) ضلع شیخوپورہ کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ نے توہین رسالت کا جرم ثابت ہونے پر 3 احمدیوں کو سزائے موت سنادی۔عدالت نے مجرموں کو 2، 2 لاکھ روپے جرمانے کی سزا بھی سنائی لیکن اگر انہوں نے رقم ادا نہ کی تو انہیں 6 ماہ قید کی سزا دی بھی جائے گی۔شیخوپورہ کے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج میاں جاوید اکرم نے فیصلہ سناتے ہوتے ہوئے کہا کہ بھلوال سے تعلق رکھنے والےتنیوں احمدی اپنی عبادت گاہ کے باہر لگائے گئے پمفلٹ اور بینرز کے ذریعے توہین رسالت کے مرتکب ہوئے۔ایک دکاندار رضا حسین کی جانب

سے شرقپور تھانے میں ان تنیوں کے خلاف شکایت درج کرائی گئی تھی۔یاد رہے کہ اس سے پہلے سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کے داماد اورمسلم لیگ (ن) کے رکن قومی اسمبلی کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر نے افواجِ پاکستان میں قادیانیوں کی بھرتی پر پابندی کے لیے قرارداد لانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ قائداعظم یونیورسٹی میں ڈاکٹر عبدالسلام سے منسوب فزکس ڈپارٹمنٹ کا نام بھی تبدیل کیا جائے، عدلیہ میں بیٹھے لوگوں سے بھی ختم نبوت سرٹیفیکیٹ پر دستخط لینے چاہئیں ، سیاسی جماعتیں ٹکٹ دیتے ہوئے اپنے امیدواروں سے ختم نبوت کے سرٹیفکیٹ پر حلف لیں۔منگل کو قومی اسمبلی میں نکتہ اعتراض پر اظہار کیا کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ پاکستانمیں فوج سمیت کسی بھی محکمے میں اعلی عہدوں میں بیٹھے ہوئے احمدی ملک کے لیے خطرہ ہیں اس لیے انھیں فوری طور پر عہدوں سے ہٹا دینا چاہیے۔کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر نے کہا کہ احمدی ملک کے لیے زہر قاتل ہیں۔انھوں نے اسلام آباد کی قائداعظم یونیورسٹی میں نوبیل انعام یافتہ پاکستانی سائنسدان ڈاکٹر عبدالسلام سے منسوب فزکس ڈپارٹمنٹ کا نام بھی تبدیل کرنے کا مطالبہ کیا۔انھوں نے کہا کہ ایسا نہ ہونے کی صورت میں وہ اس پر احتجاج کریں گے اور روزانہ قومی اسمبلی میں اس حوالے سے یاد دہانی کروائیں گے ۔ کیپٹن(ر) صفدر نے عدلیہ میں بیٹھے لوگوں سے بھی ختم نبوت سرٹیفیکیٹ پر دستخط لینے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ انصاف کی کرسی پر کسی بھی ایسے شخص کو نہیں بٹھانا چاہیے جس کا تعلق احمدی برادری سے ہو۔انھوں نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ سیاسی جماعتیں بھی ٹکٹ دیتے ہوئے اپنے امیدواروں سے ختم نبوتؐکے سرٹیفکیٹ پر حلف لیں۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں