میاں صاحب کو خاموش کرنیکا فیصلہ، اب کی بار ایک اور لمبی رخصت، لاہور پہنچتے ہی نواز شریف کے ساتھ کیا سلوک کیا جائے گا؟ دھماکہ خیز انکشاف

  جمعہ‬‮ 11 اگست‬‮ 2017  |  19:27

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) میاں صاحب کو خاموش کرنیکا فیصلہ، اب کی بار ایک اور لمبی رخصت، لاہور پہنچتے ہی نواز شریف کے ساتھ کیا سلوک کیا جائے گا؟ تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما ظفر علی شاہ نے حیران کن بیان دیا جس میں انہوں نے کہا کہمیاں نواز شریف کو لاہور پہنچتے ہی ان کو تین ماہ کے لئے نظر بند کیے جانے کا خدشہ ہے۔ ایک نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کے سینیٹر ظفر علی شاہ نے کہا کہ مجھے ایسا لگتا ہے کہ میاں نواز شریف جیسے

جیسے لاہور کے قریب جا رہے ہیں ان کا پارہ بڑھتا جا رہا ہے اور ان کی تقریریں اس زمرے میں شامل ہو رہی ہیں کہ یہ عوام کو مشتعل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ ظفر علی شاہ نے کہا کہ انہیں لگتا ہے کہ آئینی اداروں اور خصوصاً سپریم کورٹ سے متعلق اتنی جارحانہ بات چیت جو سنی نہیں جا سکتی نہ ہی برداشت کی جا سکتی ہے اور اس کے علاوہ آپ عوام کو سپریم کورٹ کے خلاف اشتعال دلائیں ، یہ بھی ناقابل برداشت ہے۔ مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما ظفر علی شاہ نے اس خدشے کا اظہار کیا کہ کہیں شہباز شریف کو ہی ڈی سی او لاہور کو حکم نہ دینا پڑ جائے جس کی وجہ سے 3 ایم پی اے کے تحت نواز شریف کو نظر بند کیا جا سکتا ہے۔ یہاں یہ بات واضح رہے کہ مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما ظفر علی شاہ سے پہلے مسلم لیگ (ن) کے سینیٹر عبد القیوم بھی اسی قسم کے خدشات کا اظہار کر چکے ہیں۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں