بے شک میری گاڑی کا شیشہ توڑ دو، میں لعنت بھیجتی ہوں ایسے لوگوں پر جو دوسروں کیلئے مشکلات کا سبب بنیں خاتون ڈرائیور احتجاج کرنے والوں پر برس پڑیں

  بدھ‬‮ 14 اپریل‬‮ 2021  |  16:25

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک،آن لائن)سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو سامنے آئی ہے جس میں خاتون احتجاج کرنے والے مظاہرین کے لیے سخت الفاظ کا استعمال کر رہی ہے،خاتون کہتی ہیں کہ ہمیں ہمارے گھر جانا ہے آپ ہمیں کیسے روک سکتے ہیں۔کارکنان کی جانب سے خاتون کو دوسرا راستہ اپنانے کا کہا جاتا ہے تو وہ کہتی ہیں کہ مجھے پٹرول کے پیسے دےدو میں وہیں سے چلے جائوں گی، آخر آپ لوگوں کے لیے پریشانی کیوں بنا رہے ہیں۔خاتون غصے میں آتے ہوئے کہتی ہیں کہ تم مارو بے شک میری گاڑی کا شیشہ توڑ دو۔ ایسے لوگوں پر لعنت


بھیجنی چاہیے جو لوگوں کے لیے مشکلات کھڑی کریں۔دوسری جانب وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کی زیر صدارت امن وامان کی صورتحال پر اجلاس منعقد ہوا ۔ اجلاس میں وفاقی وزیر مذہبی امورنور الحق قادری نے بھی شرکت کی ۔ اجلاس میں سیکرٹری داخلہ، آئی جی پنجاب، چیف کمشنر اسلام آباد ، آئی جی اسلام آباد، رینجرز اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے نمائیندوں نے شرکت کی ۔اجلاس میں آئی جی پنجاب انعام غنی اور کمشنر راولپنڈی نے بذریعہ ویڈیو لنک شرکت کی ۔ اجلاس میں احتجاج کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے پولیس، رینجرز اور ضلعی انتظامیہ کو علاقے کلئیر کرانے پر مبارکباد دی ۔ اجلاس میں شہید ہونے والے پولیس کے جوانوں کو خراج تحسین پیش کیا گیا ۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیاقانون ہاتھ میں لینے والوں سے سختی سے نمٹا جائے گا۔ وزیر داخلہ نے اجلاس کے شرکاء کو ہدایت کی کہ ریاست کی رٹ کو ہر صورت یقینی بنایا جائے۔ انہوں نے کہا موٹرویز، جی ٹی روڑ اور باقی بڑی سڑکیں ٹریفک کے لئے کلیر کروالی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا اسلام آباد راولپنڈی میں لیاقت باغ، ترنول، بارہ کہو، روات کے علاقوں کو ٹریفک کے کئے کھلوا لیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا رینجرز نے پولیس اور انتظامیہ کے ساتھ ملکر بہت زبردست کام کیا ہے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

درمیان

یہ ایک ڈاکٹر کی کہانی ہے‘ ڈاکٹر صاحب اس وقت آسٹریلیا میں ہیں اور یہ وہاں ایسی شان دار زندگی گزار رہے ہیں جس کا ان کے کسی کلاس فیلو نے خواب تک نہیں دیکھا تھا‘ ہم سب لوگ زندگی میں ٹاپ کرنا چاہتے ہیں‘ ہم ہر کلاس میں اول آنا چاہتے ہیں‘ ہم بازار کا مہنگا ترین لباس خریدنا ....مزید پڑھئے‎

یہ ایک ڈاکٹر کی کہانی ہے‘ ڈاکٹر صاحب اس وقت آسٹریلیا میں ہیں اور یہ وہاں ایسی شان دار زندگی گزار رہے ہیں جس کا ان کے کسی کلاس فیلو نے خواب تک نہیں دیکھا تھا‘ ہم سب لوگ زندگی میں ٹاپ کرنا چاہتے ہیں‘ ہم ہر کلاس میں اول آنا چاہتے ہیں‘ ہم بازار کا مہنگا ترین لباس خریدنا ....مزید پڑھئے‎