چین، بدھ مت کا پہلا روبوٹ راہب سامنے آگیا مذہب کی بنیادی تعلیمات سے متعلق سوالات کے جوابات دینے سمیت اور کیا کام کرسکتا ہے؟

  ہفتہ‬‮ 12 مئی‬‮‬‮ 2018  |  14:59

بیجنگ(آئی این پی/شِنہوا)بدھست روبورٹ پہنچ گئے ہیں اور چین کی دوممتاز فنی فرموں آئی فلائی ٹک اور ٹین سنٹ نے روبورٹ راہب کی ذہانت میں اضافہ کرنے کی کوشش کے لیے ایک مندر کے ساتھ معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔ بیجنگ کے لانگ چوان بدھ مندر کا ماسٹر شیان ڈو مشرقی چین کے صوبہ سنکیانگ کے شہر یویائو میں منعقدہ سالانہ سربراہی کانفرنس پانچویں روبوٹاپ میں شیو شدہ سر کے ساتھ زرد ربن والے ساٹھ سنٹی میٹر لمبے روبورٹ راہب شیان ،ار کے ساتھ کھڑ اہے۔ بدھست مندر میںمنصوعی زہانت اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے انچارج ماسٹر نے کہا کہ مندر

نے شیان ، ار کو اپ گریٹ کرنے کے لیے اپ ٹو ڈیٹ مصنوعی زہانت ٹیکنالوجی متعارف کرانے کو کہا ہے۔منگل کی ٹیکنالوجی ٹیم نے 2015میں آزادانہ طور پر روبورٹ راہب بنایا جو کہ بدھ مذہب کی بنیادی تعلقات کے بارے میں سوالات کا جواب دے سکتا ہے۔ اور منتر پڑھ سکتا ہے۔ شیان ڈونے کہا کہ آئی فلائی ٹک اور ٹین سنٹ کے ساتھ معاہدے پر دستخط کرکے مندر کو امید ہے کہ وہ شیان ، ار کا تیسرا ماڈل تیار کرلے گا

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں