huk camera

اگر آپ کو کسی ٹوائلٹ یا ٹرائی روم میں اس طرح کا کوٹ ہینگر لگا ہوا نظر آئے تو فوراً پولیس کو کال کریں

  اتوار‬‮ 16 اپریل‬‮ 2017  |  6:00
اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) جدید ٹیکنالوجی ایک جانب انسان کی زندگی آسان کر رہی ہے وہیں کچھ شیطان صفت لوگ اسے غلیظ مقاصد کے لئے استعمال کر کے انسانوں کی زندگیاں برباد بھی کر رہے ہیں۔ پبلک ٹوائلٹس اور ملبوسات کی دکانوں کے ٹرائی رومز میں ایک خاص قسم کے ہینگر کا انکشاف بھی ایسی ہی مثال ہے، جس میں لگے کیمرے کے ذریعے لوگوں کی خفیہ ویڈیوز ریکارڈ کر لی جاتی ہیں جبکہ انہیں اس کی خبر تک نہیں ہوتی۔ پولیس کو اس قسم کے ہینگر استعمال کئے جانے کی شکایتیں بڑی تعداد میں موصول ہو رہی ہیں۔ عام طور

(خبر جا ری ہے)

یہ ہینگر پلاسٹک سے بنا ہوتا ہے جو بظاہر کپڑے لٹکانے والے کسی بھی عام ہینگر جیسا نظر آتا ہے لیکن اس کے بالائی سرے کے قریب ایک چھوٹا سا سوراخ ہوتا ہے جس کے اندر ننھا سا کیمرہ لگا ہوتا ہے۔ جب ہم کسی پبلک ٹوائلٹ یا ٹرائی روم میں داخل ہوتے ہیں تو اکثر اس جانب دھیان نہیں جاتا کہ اس قسم کے ہینگر کے ذریعے ہماری ریکارڈنگ ہو سکتی ہے۔ مزید تشویشناک بات یہ ہے کہ ’سپائی ہک‘ کہلانے والا یہ ہینگر مارکیٹ میں اور آن لائن خریداری کے لئے بآسانی دستیاب ہے۔ کوئی بھی مجرم صفت شخص اسے خرید کر کسی بھی جگہ نصب کرسکتا ہے۔ یہ عارضی طور پر نصب کرنے کے بعد اتارا جاسکتا ہے اور یوں اس کے اندر ریکارڈ ہونے والی ویڈیو کسی بھی غلط مقصد کے لئے استعمال ہوسکتی ہے۔قانون نافذ کرنے والے اداروں نے خبردار کیا ہے کہ کسی بھی جگہ آپ کو اس طرح کا ہینگر نظر آئے تو فوری طور پر وہ جگہ چھوڑ دیں اور پولیس کو اطلاع کریں۔

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) جدید ٹیکنالوجی ایک جانب انسان کی زندگی آسان کر رہی ہے وہیں کچھ شیطان صفت لوگ اسے غلیظ مقاصد کے لئے استعمال کر کے انسانوں کی زندگیاں برباد بھی کر رہے ہیں۔ پبلک ٹوائلٹس اور ملبوسات کی دکانوں کے

ٹرائی رومز میں ایک خاص قسم کے ہینگر کا انکشاف بھی ایسی ہی مثال ہے، جس میں لگے کیمرے کے ذریعے لوگوں کی خفیہ ویڈیوز ریکارڈ کر لی جاتی ہیں جبکہ انہیں اس کی خبر تک نہیں ہوتی۔ پولیس کو اس قسم کے ہینگر استعمال کئے جانے کی شکایتیں بڑی تعداد میں موصول ہو رہی ہیں۔ عام طور پر یہ ہینگر پلاسٹک سے بنا ہوتا ہے جو بظاہر کپڑے لٹکانے والے کسی بھی عام ہینگر جیسا نظر آتا ہے لیکن اس کے بالائی سرے کے قریب ایک چھوٹا سا سوراخ ہوتا ہے جس کے اندر ننھا سا کیمرہ لگا ہوتا ہے۔ جب ہم کسی پبلک ٹوائلٹ یا ٹرائی روم میں داخل ہوتے ہیں تو اکثر اس جانب دھیان نہیں جاتا کہ اس قسم کے ہینگر کے ذریعے ہماری ریکارڈنگ ہو سکتی ہے۔ مزید تشویشناک بات یہ ہے کہ ’سپائی ہک‘ کہلانے والا یہ ہینگر مارکیٹ میں اور آن لائن خریداری کے لئے بآسانی دستیاب ہے۔ کوئی بھی مجرم صفت شخص اسے خرید کر کسی بھی جگہ نصب کرسکتا ہے۔ یہ عارضی طور پر نصب کرنے کے بعد اتارا جاسکتا ہے اور یوں اس کے اندر ریکارڈ ہونے والی ویڈیو کسی بھی غلط مقصد کے لئے استعمال ہوسکتی ہے۔قانون نافذ کرنے والے اداروں نے خبردار کیا ہے کہ کسی بھی جگہ آپ کو اس طرح کا ہینگر نظر آئے تو فوری طور پر وہ جگہ چھوڑ دیں اور پولیس کو اطلاع کریں۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

loading...

روزانہ کی دس بڑی خبریں بذریعہ ای میل حاصل کریں

بذریعہ ای میل آپ کو دس بڑی خبروں کے ساتھ ساتھ کرنسی اور سونے کے ریٹس بھی بھیجے جائیں گے۔