آزادی مارچ، کنٹینر سے مقرر سیاسی مخالفین کیلئے انتہائی نازیبا الفاظ کا استعمال شروع، مولانا فضل الرحمان کا حیران کن ردعمل

  منگل‬‮ 12 ‬‮نومبر‬‮ 2019  |  19:41

اسلام آباد(آن لائن)آزادی مارچ کے کنٹینر سے مقررین اپنی تقریروں میں سیاسی مخالفین کے لئے انتہائی نازیبا الفاظ استعمال کرنے لگے،دھرنے میں موجود شرکاء انتہائی نازیبا الفاظ پر شرمسار ہونے کے بجائے داد تحسین دیتے ہیں۔تفصیلات کے مطابق پشاور موڑ اسلام آباد میں جمعیت علماء اسلام کے دھرنے میں مقرر ین شرکاء کا لہو گرمانے کیلئے اپنی تقریروں میں نازیبا الفاظ کا استعمال کررہے ہیں۔سیاسی مخالفین تو دور کی بات مذہبی سکالربھی گھٹیا الفاظ میں تنقید کر رہے ہیں۔یاد رہے کہ جمعیت کے کارکن ماضی میں تحریک انصاف کے دئیے گئےدھرنے پر سخت تنقید کرتے تھے،پاکستان کا کوئی شہری جب


دھرنے کا مشاہدہ کرنے وہاں جاتا ہے تو مقررین کے الفاظ سن کر کانوں کو ہاتھ لگاتے ہوئے واپس آتا ہے۔شہری یہ کہتے ہوئے پائے گئے کہ مذہبی رہنماؤں کا یہ عالم ہے تو باقی عام شہریوں کا کیاحال ہوگا،گزشتہ روز مارچ کے کنٹینر سے مولانا مینگل نامی مقرر نے ممتاز مذہبی سکالر طارق جمیل کے حوالے سے نہ صرف نازیبا الفاظ استعمال کئے بلکہ ان کی نقل کرتے رہے،جس پر دھرنے کے شرکاء محظوظ ہوتے رہے۔جمعیت علمائے اسلام کے امیر مولانا فضل الرحمان کے نوٹس میں یہ بات لائی گئی تو انہوں نے اس پر معذرت کرنے کی بجائے چپ سادھ لی۔

loading...