پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں بدترین مندی،سرمایہ کاروں کے اربوں ڈوب گئے، انڈیکس متعدد نفسیاتی حدوں سے گر گیا، صورتحال انتہائی تشویشناک

  پیر‬‮ 24 جون‬‮ 2019  |  20:26

کراچی (این این آئی)پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں کاروباری ہفتے کے پہلے روزپیر اتارچڑھاؤ کے بعد زبردست مندی رہی اور کے ایس ای100انڈیکس کی35100،35000،34900،34800،34700،34600اور34500کی نفسیاتی حدوں سے گرگیا،مندی کے نتیجے میں سرمایہ کاروں کے96ارب40کروڑ روپے سے زائدڈوب گئے،کاروباری حجم گذشتہ روزکی نسبت39.08فیصدکم جبکہ81فیصد حصص کی قیمتوں میںکمی ریکارڈکی گئی۔حکومتی مالیاتی اداروں، مقامی بروکریج ہاؤسزسمیت دیگرانسٹی ٹیوشنز کی جانب سے توانائی،سیمنٹ،فوڈز،بینکنگ اور دیگرمنافع بخش سیکٹرکی نچلی سطح پر آئی ہوئی قیمتوں پر خریداری کے باعث مارکیٹ میں کاروبار کا آغازمثبت زون میں ہواٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پرکے ایس ای 100 انڈیکس کی35194کی سطح پر بھی ریکارڈ کیاگیاتاہم سیاسی افق پر چھائی


بے یقینی کی صورتحال،وفاقی بجٹ پر اپوزیشن کے سخت رویے کے سبب بجٹ کی منظوری التوا میں جانے کے خدشے،ایف بی آر کی جانب سے ٹیکس وصولی کیلئے انقلابی اقدامات سے جڑی خبروں پر مقامی سرمایہ کارتذبذب کاشکار نظرآئے،جس کی وجہ سے انہوں نے مارکیٹ میں نئی پوزیشن لینے سے گریزکیا، جس کے نتیجے میں تیزی کے اثرات زائل ہوگئے اور کے ایس ای100انڈیکس34368پوائنٹس کی نچلی سطح پر بھی دیکھا گیاتاہم غیرملکی سرمایہ کاروں کی جانب سے مارکیٹ میں ایک بار پھرسرمایہ کارآئی جس کے نتیجے میں کے ایس ای100انڈیکس کی 34000کی حد بحال ہوگئی تاہم اتارچڑھاؤکا سلسلہ سارادن جاری رہا۔مارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس653.30پوائنٹس کمی سے34471.95 پوائنٹس پر بندہوا۔پیرکو مجموعی طور پر337کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا،جن میں سے46کمپنیوں کے حصص کے بھاؤمیں اضافہ،273کمپنیوں کےحصص کے بھاؤ میں کمی جبکہ18کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں استحکام رہا۔سرمایہ کاری مالیت میں 96ارب 40کروڑ81لاکھ3ہزار412روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی،جس کے نتیجے میں سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر69کھرب67ارب17کروڑ12لاکھ67ہزار785روپے ہوگئی۔پیرکومجموعی طور پر7کروڑ87لاکھ64ہزار150شیئرز کاکاروبارہوا،جوپیرکی نسبت5کروڑ5لاکھ41ہزار660شیئرزکم ہیں۔قیمتوں کے اتارچڑھاؤ کے حساب سےفپلس موریس پاک کے حصص سرفہرست رہے،جس کے حصص کی قیمت169.53روپے اضافے سے3818.53 روپے اورنیسلے پاکستان کے حصص کی قیمت69.50روپے اضافے سے6917.50روپے پر بند ہوئی۔نمایاں کمی ماڑی پیٹرولیم کے حصص میں ریکارڈکی گئی،جس کے حصص کی قیمت34.74روپے کمی سے1021.55روپے اورایبٹ لیبارٹری کے حصص کی قیمت23.27روپے کمی سے442.15روپے ہوگئی۔پیرکوکے الیکٹرک لمیٹڈکی سرگرمیاں 63لاکھ99ہزارشیئرز کے ساتھ سرفہرست رہیں،جس کے شیئرز کی قیمت4.25روپے پر مستحکم رہی جبکہ ٹی آر جی پاک لمیٹڈ کی سرگرمیاں 53لاکھ96ہزار500شیئرز کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہی،جس کے شیئرزکی قیمت99کمی سے17.11روپے ہوگئی۔پیرکوکے ایس ای30انڈیکس344.32پوائنٹس کمی سے16287.45پوائنٹس،کے ایم آئی30انڈیکس1561.87پوائنٹس کمی سے55144.34پوائنٹس جبکہ کے ایس ای آل شیئر انڈیکس346.89پوائنٹس کمی سے25275.81پوائنٹس پربندہوا۔

loading...