غریب بھوک وافلاس سے مر رہے ہیں حکومت سب اچھا ہوجائیگا کی بانسری بجا رہی ہے، ثروت اعجاز قادری بھی حکومت کے خلاف اٹھ کھڑے ہوئے

  پیر‬‮ 24 جون‬‮ 2019  |  18:47

کراچی (این این آئی) سربراہ پاکستان سنی تحریک محمد ثروت اعجاز قادری نے کہا ہے کہ معاشی بحران حکومتی ناقص پالیسیوں کا نتیجہ ہے،غریبوں کو کسی صورت تنہا نہیں چھوڑینگے،غریبوں،کسانوں،مزدوروں کو معاشی طور پر ریلیف نہیں دیا گیا تو احتجاج کا سلسلہ شروع کردینگے،روزمرہ استعمال ہونیوالی اشیاء کو ٹیکس سے پاک اور غریبوں کو بجلی،گیس،پانی کے بلوں میں اضافی ٹیکس کو فوری ختم کیا جائے،بجلی کے بلوں میں 200یونٹ تک کسی بھی قسم کا ٹیکس نہیں لگایا جائے،بجٹ اورپیٹرولیم کی آئے روز بڑھتی قیمتوں نے عوام کا سکون چھین لیا ہے،غریب بھوک وافلاس سے مر رہے ہیں اور حکومت سب


اچھا ہوجائیگا کی بانسری بجا رہی ہے،پاکستان سنی تحریک کی جڑیں عوام میں ہیں عوامی مسائل سے آگاہ ہیں،حکمرانوں کو بجٹ میں غریبوں کو ریلیف دینے کے مطالبے کرکرے تھک گئے ہیں،حکومت نے غریب عوام کے خلاف رویہ نہیں بدلا تو سول اپوزیشن کا کردار ادا کرینگے،غریب وعوام دشمن پالیسیوں کا کسی طور بھی ساتھ نہیں دے سکتے،ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکز اہلسنت پر سندھ کابینہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا،اس موقع پر سندھ کے صدر نور احمد قاسمی،صوبائی رہنما خالد حسن عطاری،التماس صابر،علی نواز قاسمی،عمران سہروردی،اکبر رضا قادری،عبداللطیف قادری،مولانا اشرف سکندری،مولانا منظور قادری،حافظ ایاز چانڈیو مرکزی رابطہ کمیٹی کے ارکان ودیگر صوبائی عہدیداران موجود تھے،ثروت اعجاز قادری نے کہا کہ نظریاتی کارکن کسی بھی تنظیم کیلئے ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں،کارکنا ن تنظیم کے پیغام کو گھر گھر جاکر عام کریں،چکی میں پسے غریب عوام کی فلاح وبہبود کیلئے بلاتفریق خدمت کو شعار بنائیں،اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ حکومت نے غریبوں کو ریلیف فراہم نہیں کیا تو سول اپوزیشن کا کردار آئین کے دائرہ کار میں رہ کر اداینگے،غریبوں کی آواز بننا ہر محب وطن جماعت کی ذمہ داری ہے پاکستان سنی تحریک ملک بھر کے غریبوں کو ریلیف دلانا چاہتی ہے،حکومت صرف دعوؤں سے کام چلارہی ہے جبکہ غریب بھوک وافلاس سے پریشان اور خود کشی کرنے پر مجبور ہوگیا ہے،ثروت اعجاز قادری نے کہا کہ عوام کا پاکستان سنی تحریک پر بھرپور اعتماد ہے عوام کے اعتماد کو ٹھیس نہیں پہنچنے دینگے،حکومت کو ایک بار پھر واضع کررہے ہیں بجٹ کو غریب وعوام دوست بنایا جائے بصورت دیگر احتجاج کی کال دینے پر مجبور ہونگے۔

loading...