’’توہین آمیز بیان اسلام و آئین کیخلاف اور حلف سے بھی غداری ‘‘ دینی جماعتوں نےفیصل واوڈاکی فوری برطرفی کا مطالبہ کردیا

  بدھ‬‮ 6 مارچ‬‮ 2019  |  16:22

لاہور (آن لائن)ملک کی قابل ذکر13 بڑی دینی جماعتوں ورلڈ پاسبان ختم نبوت کے سربراہ علامہ محمد ممتاز اعوان،جے یو آئی کے راہنما حافظ حسین احمد،جے یو پی کے راہنما پیر جمشید احمد نورانی جماعت اسلامی کے نائب امیر ڈاکٹر فرید احمد پراچہ، تحریک ناموسِ رسالتؐ کے راہنما پیر سلمان منیر،مسلم لیگ علماء و مشائخ ونگ کے چیئرمین پیر ولی اللہ شاہ بخاریجمعیت اہلحدیث کے راہنما شیخ محمد نعیم بادشاہ ،جمعیت اہل سنت کے سربراہ مولانا محمد حنیف حقانی تحریک ملت جعفریہ کے علامہ تنویر الحسن نقوی، مصطفائی جسٹس موومنٹ کے میاں اشرف عاصمی ایڈووکیٹ،تنظیم علماء و مشائخ کے راہنما


پیر طارق محمود نقشبندی،مجلس احرار اسلام کے مولانا یوسف احرار، اتحاد علماء کونسل کے مفتی عاشق حسین اور حافظ شعیب الرحمن نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں پی ٹی آئی حکومت کے وفاقی وزیر فیصل واوڈا کی طرف سے توہین آمیز الفاز استعمال کرنے پر سخت احتجاج کرتے ہوئے فیصل واوڈا کی فوری برطرفی کا مطالبہ کیا ہے اور کہا ہے کہ وزیر موصوف کا بیان نہ صرف اسلامی تعلیمات اور آئین پاکستان سے بغاوت ہے بلکہ اپنے عہدہ وزارت کے حلف سے بھی غداری ہے۔ عمران خان صرف ناراضگی نہیں بلکہ 22کروڑ مسلمانوں کے جذبات کی توہین پر فیصل واوڈا کو وزارت سے برطرف کریں ۔علامہ ممتاز اعوان نے کہا کہ اللہ تعالیٰ کے بعد عمران کو بڑا لیڈر کہنا فیصل واوڈا کی یہودی و قادیانی ذہنیت کی عکاسی کرتا ہے جو پاکستان کے اسلامی تشخص کو مٹانے کی یہودی و قادیانی لابی کی کارستانی ہے جس سے مسلمانوں میں شدید اشتعال پایا جارہا ہے۔ اگر انہیں برطرف نہ کیاگیا تو مسلمانوں کے اندر پیدا ہونیوالا اشتعال اورشدید غم و غصہ کسی بڑی دینی تحریک کا روپ دھار سکتا ہے ۔

موضوعات:

loading...