’’ شہبازشریف کی گرفتاری (ن)لیگیوں کیلئے باعث شرمندگی ‘‘ باقی ٹولے کیساتھ کیا ہونیوالا ہے؟ تحریک انصاف نے بڑا اعلان کر دیا

  ہفتہ‬‮ 6 اکتوبر‬‮ 2018  |  13:45

لاہور ( این این آئی) پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما ولید اقبال نے کہا ہے کہ شہبازشریف کو ہیرو بنانے کی مسلم لیگ (ن) ناکام کوشش نہ کرے، کرپشن کے الزام میں شہبازشریف کی گرفتاری باعث شرمندگی ہے، لوٹ مار میں ملوث باقی ٹولہ بھی قانون کی گرفت میں آئیگا، لوٹ مار کرنیوالوں کی گرفتاری سے جمہوریت کو کوئی خطرہ لاحق نہیںالبتہ ان کا آزاد پھرنا ملک کی معیشت کیلئے خطرناک ہے۔ این اے 131سےتحریک انصاف کے امیدوار ہمایوں اخترخان کے اعزاز میں والٹن روڈ پر ناشتہ کا اہتمام کیاگیا جس میں صدر تحریک انصاف لاہور ولید اقبال اور

اراکین قومی و صوبائی اسمبلی سمیت احمد ریاض،رخسانہ نوید،سعدیہ سہیل،شنیلا روت، نعیم الحق، شیخ امتیاز،صادقہ آپا،میجر ریٹائرڈجاویدضمیر، شیخ ارشاد، فیصل حاکم بھٹی اور اویس یونس و دیگر رہنمائوں نے شرکت کی۔ ولید اقبال نے اپنے خطاب میں کہاکہ این اے 131کی سیٹ سے ایک بار پھر کامیابی حاصل کریں گے، سیاسی مخالفین اوچھے ہتھکنڈوں سے پڑے لکھے ووٹرز کو مرعوب نہیں کرسکتے، آشیانہ ہائوسنگ سکیم سے میاں شہبازشریف ہی نہیں خواجہ سعد رفیق سمیت درجنوں نون لیگی رہنمائوں نے بھرپور فائدہ اٹھایا، عوام کے نام پر بننے والے فلیٹس کی بندر بانٹ کی گئی اور اپنے ہی لوگوں کو نوازا گیا عوام منہ دیکھتے رہ گئے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن)نے عوام کا استحصال کیا، اب پکڑے گئے تو جمہوریت خطرے میں نظرآنے لگی، انہوں نے کہا کہ کارکن ضمنی انتخابات میں ایک بار پھر کامیابی کیلئے جان لڑادیں انشاء اللہ یہ سیٹ دوبارہ جیتیں گے۔ ولید اقبال نے کہاکہ تیس سال ملک کو مال مفت سمجھنے والوں کے احتساب کا وقت آیا تو ان کی چیخیں نکل گئیں، وزیراعظم عمران خان سے پہلے کسی نے کرپشن کیخلاف نعرہ نہیں لگایا تھا کیونکہ چور، چور سے ملے ہوئے تھے، اب بھی ان میں کرپشن کا پیسہ بچانے کیلئے اتفاق و اتحاد و یگانگت نظر آئیگی جو کبھی عوام کے مفاد کیلئے نظرنہیں آئی تھی ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ہمایوں اختر خان نےولید اقبال اوردیگر رہنمائوں کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ باشعور عوام اب جھانسے میں نہیں آئیں گے اور ضمیر کے مطابق صاف ستھری قیادت کو منتخب کریں گے، چودہ اکتوبر کا دن ایک بار پھر تحریک انصاف کی کامیابی کا دن ثابت ہوگا۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں