اسلام آباد میں پیپلزپارٹی رہنما کے مبینہ قبضے سے 50مرلے سرکاری اراضی واہ گزار کرالی گئی،سرکاری اراضی پر کی گئی بے نظیر ہاؤس کے نام سے غیر قانونی تعمیرات مسمار 

  ہفتہ‬‮ 30 جون‬‮ 2018  |  0:08

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) اسلام آباد ہائی کورٹ کے حکم پر وفاقی ترقیاتی ادارے (سی ڈی اے) کے شعبہ انفورسمنٹ نے پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما آغا محمد علی کے مبینہ قبضے سے 50مرلے کی کروڑوں روپے مالیاتی سرکاری ارضی واگزار کروا لی گئی۔ تفصیلات کے مطابق سی ڈی اے نے گزشتہ روز اسلام آباد ہائی کورٹ کے حکم پر سیکٹر ایف الیون میں کروڑوں روپے کی سرکاری اراضی پر غیر قانونی طور پر مبینہ قبضہ اور تعمیرات کرنے والے پاکستان پیپلز پارٹی کے مقامی رہنما آغا محمد علی کے خلاف کریک ڈان کرتے ہوئے 50مرلےکی قیمتی سرکاری اراضی پر کی


گئی بے نظیر ہاؤس کے نام سے غیر قانونی تعمیرات کو مسمار کر دیا گیا ،جبکہ مقامی پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما کوگزشتہ صبح ہائی کورٹ کے جج شوکت صدیقی کی جانب سے توہین عدالت کا سامنا بھی کرنا پڑا تھا۔واضح رہے کہ عام انتخابات سے قبل سیاسی کارکونان مبینہ طور پر وفاقی پولیس اورانتظامیہ افسران کی جیب گرم کر کے مہم چلانے کے خاطر سادہ لوح شہریوں اور سرکاری اراضی پر قبضہ کر لیتے ہیں تاہم پولیس اور انتظامیہ کسی اعلی اتھارٹی کے احکامات کے بغیر خاموش تماشائی بنی رہتی ہے۔

موضوعات:

loading...