جنید جمشید نے جب تبلیغ کا راستہ اپنایا تو ان پر کیا ، کیا آزمائشیں آئیں مولانا طارق جمیل کی زبانی ایک ایمان افروز واقعہ

  جمعرات‬‮ 7 دسمبر‬‮ 2017  |  16:24

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)جنید جمشیدکی طیارہ حادثے میں ہونے والی شہادت کے بعد نجی ٹی وی ایکسپریس نیوز کے پروگرام’کل تک‘میں معروف کالم نگار ، اینکر و تجزیہ کار جاوید چوہدری کے ساتھ خصوصی گفتگو کرتےہوئے جنید جمشید کے استاد، ساتھی اور دوست مولانا طارق جمیل نے بتایا تھا کہ جنید جمشید جب شوبز کی دنیا چھوڑ کر اسلام کی تبلیغ کے راستے پر چلے تو سب سے پہلے انہوں نے اللہ کے دین کی تبلیغ کیلئے سہ روزہ کا اہتمام کیا بعد ازاں وہ 40دن کیلئے اللہ کے راستے کیلئے نکلے اور پھر یہ سلسلہ چل پڑا، مولانا طارق جمیل

نے بتایا کہ شوبز چھوڑنے کے بعد ایک دن جنید جمشید کا مجھے فون آیا اور انہوں نے بتایا کہ مولانا میرے گھر میں اس وقت ایک پھوٹی کوڑی بھی موجود نہیںاور اتنے پیسے نہیں کہ ماں کی دوا تک لاسکوں اور معروف کولڈ ڈرنگ برانڈ پیپسی کولا نے مجھے پیش کش کی ہے کہ اگر میں انہیں ان کی کمپین کے سلسلے میں ایک میوزک البم بنا کر دوں تو وہ اس کے عوض مجھے 4کروڑروپے دینے کیلئے تیار ہیں جسے میں نے ٹھکرا دیا ہے۔ مولانا طارق جمیل کا کہنا تھا کہ محبت ایک ایسا عمل ہے جو انسان کو بے پروا کر دیتا ہے اور انسانیت کی خدمت اور معبود سے محبت کے در کھلنے لگ جاتے ہیں اور یہی جنید جمشید نے کیا ۔ اللہ کا راستہ اختیار کرنے کے بعد انہوں نے پھر ہر اس چیز کو ٹھکرا دیا جو ان کی راہ میں رکاوٹ بننا چاہتی تھی۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں