’’ہم اگر جنرل باجوہ کو نکال دیں تو کونسی قیامت آ جانی ہے‘‘ لندن میں نواز شریف نے یہ بات کس وزیر اعظم کو کہی؟

  منگل‬‮ 17 اکتوبر‬‮ 2017  |  11:36

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما اور ماہر قانون دان نعیم بخاری نے کہا ہے کہ جب ضیا الحق کی پہلی برسی تھی تو نواز شریف نے کہا تھا کہ میں ان کا مشن جاری رکھوں گا، ہمیں نہیں معلوم کہ ان کا مشن کیا تھا، وہ ہمیں ضیاالحق کیطرح کوڑے مارنا چاہتے ہیں؟ نعیم بخاری نے کہا کہ نواز شریف شروع دن سے فوج کو اپنا ذاتی دشمن سمجھتے ہیں اور انہوں نے ہمیشہ فوج کیخلاف زہر اگلا ہے۔ ایک مرتبہ نواز شریف لندن میں تھے

تو انہوں نے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی سے کہا کہ اگر ہم جنرل باجوے کو نکال دیں تو کون سی قیامت آ جائے گی؟ ہم اپنی مرضی کا نیا جنرل لگا لیں گے۔ نعیم بخاری نے کہا کہ جب بھی کوئی پاک فوج کا سربراہ بنتا ہے تو وہ ادارے کا بندہ بن جاتا ہے کسی شخص کا بندہ نہیں رہتا ، کہا یہ جاتا ہے کہ جنرل باجوہ بھی نواز شریف کی پسند تھے لیکن جب چیف بن گئے تو وہ ادارے کے ’’بندے‘‘ بن گئے۔ نعیم بخاری نے کہا کہ نواز شریف اور ان کی حکومت ہمیشہ عدلیہ اور فوج پر حاوی ہونا چاہتی ہے۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں