مشاورت مکمل،طاقت دکھانے کا فیصلہ، نوازشریف نے ’’ہاں‘‘ کردی،تفصیلات منظر عام پرآگئیں

  پیر‬‮ 25 ستمبر‬‮ 2017  |  21:39

اسلام آباد(این این آئی) سابق وزیراعظم نوازشریف نے نیب ریفرنسز پر احتساب عدالت میں پیشی کیلئے آئینی و قانونی ماہرین سے مشاورت مکمل کرلی۔ ذرائع کے مطابق میاں نوازشریف نے احتساب عدالت میں پیشی کے معاملے پر پارٹی رہنماؤں اور آئینی و قانونی ماہرین سے مشاورت کی ہے جو مکمل کرلی گئی ہے۔ذرائع کے مطابق مشاورت میں وفاقی وزرا اسحاق ڈار ٗزاہدحامد ٗسعدرفیق ٗپرویز رشید ٗ چوہدری نثارعلی خان ٗ سردار مہتاب عباسی،عبدالقادر بلوچ، سیف الرحمان، آصف کرمانی، گورنر پنجاب، وزیراعلیٰ گلگت بلتستان اور دیگر آئینی و قانونی ماہرین بھی شریک ہوئے۔ذرائع نے بتایا کہ اجلاس میں اسحاق ڈار نے

اپنی عدالت میں پیشی کے حوالے سے بریف کیا جس میں انہوں نے بتایا کہ عدالت سے وقفے کی استدعا کی لیکن ایک دن بعددوبارہ سماعت رکھ دی، قانون کے مطابق بھی ایک ہفتے کا وقفہ ہوسکتا تھا۔اجلاس میں پارٹی صدر سے متعلق سینیٹ سے بل کی منظوری پر اظہار اطمینان کیا گیا جبکہ پارٹی رہنماؤں نے نوازشریف کی وطن واپسی پر انہیں خراج پیش کرتے ہوئے اسے احسن اقدام قرار دیا۔ذرائع نے بتایا کہ مشاورتی اجلاس میں نوازشریف کی احتساب عدالت میں پیشی سے متعلق حکمت عملی بھی طے کرلی گئی ہے جس میں فیصلہ کیا گیا کہ پارٹی کے مرکزی رہنما نوازشریف کے ساتھ احتساب عدالت جائیں گے، کارکنوں کو احتساب عدالت نہ بلایا جائے گا اور نہ ہی روکا جائیگا۔نوازشریف نے پارٹی رہنماؤں کو ہدایت کی کہ احتساب عدالت میں کوئی بے انتظامی نہیں ہونی چاہیے۔شریف خاندان کے فیملی ذرائع کے مطابق خواجہ حارث احتساب عدالت میں نوازشریف کی وکالت کریں گے اور احتساب عدالت میں نوازشریف کے بچوں کی وکالت امجد پرویز کریں گے جبکہ نیب ریفرنس کے معاملے پر نوازشریف اور خواجہ حارث کے درمیان ملاقات ہوچکی ہے۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں