نواز شریف کے دور میں کی گئی کرپشن کا ایک نیا سکینڈل سامنے آ گیا

  جمعرات‬‮ 14 مارچ‬‮ 2019  |  11:44
اسلام آباد( آن لائن )وزارت بجلی میں 1ارب کی کرپشن سکینڈل کا نیا انکشاف ہوا ہے ، یہ سکینڈل نواز شریف دور حکومت میں سامنے آیا تھا جس میں سیکرٹری یونس دھاگہ ، وزیر بجلی عابد شیر علی اور میپکو حکام کے ملوث ہونے بارے امکانات پائے جاتے ہیں۔سرکاری ذرائع اور دستاویزات میں انکشاف ہوا ہے کہ 2015میں وزارت بجلی کے حکام کو 1ارب 9کروڑ مالیت کے بجلی ٹرانسفارمر خریدنے کی اجازت دی گئی تھی۔ میپکو حکام نے بھاری مالیت کے غیر معیاری ٹرانسفارمر خرید رکھے ہیں جو اپنی طبی مدت سے پہلے ہی خراب ہو جاتے ہیں جبکہ لوڈ کے وقت ٹرپ کر جاتے ہیں۔اس خریداری کی بڑے پیمانے پر تحقیقات جاری ہیں تاہم میپکو حکام ایک ارب روپے مالیت کے خریدے گئے ٹرانسفارمر کا مکمل ریکارڈ فراہم کرنے پر راضی نہیں اور کاغذات کو چھپا نے میں مصروف ہیں ۔ میپکو حکام نے ایک ارب روپے کا الیکٹرانک میٹریل خریدنے میں بھی اعلٰی پیمانے پر نوسر بازی کررکھی ہے ۔ دستاویزات میں پتہ چلا ہے کہ ایک ارب کی اشیاء کی خیداری کرتے وقت 20پرچیز آرڈ ر جاری کئے تاکہ وہ من پسند ٹھیکیدار وں کو اس کام کا ٹھیکہ دے سکیں ۔ اس خریداری کو پیپر رولز کی خلاف ورزی قار دیا گیا ہے اور ذمہ داروں کے خلاف کاروائی کا امکان ہے۔

loading...