یہ عہدہ میرے شایان شان نہیں ہے ، پی ٹی آئی کے سینئر رہنما راجہ ریاض نے عہدے سے استعفیٰ دیدیا

  بدھ‬‮ 12 دسمبر‬‮ 2018  |  12:38
اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)پی ٹی آئی رکن قومی اسمبلی راجہ ریاض نے وفاقی پارلیمانی سیکرٹری پٹرولیم کے عہدے سے استعفیٰ دیدیا،راجہ ریاض نے استعفیٰ وزیراعظم کوبھجوادیا ۔نجی ٹی وی کے مطابق راجہ ریاض نے استعفیٰ میں موقف اختیار کیا ہے کہ اس سے پہلے پنجاب میں اپوزیشن لیڈر اور سینئروزیر رہ چکا ہوں،لٰہذایہ عہدے میرے شایان شان نہیں،اس لئے عہدے پرذمہ داری جاری نہیں رکھ سکتا۔بطورایم این اے کام کروں گا،ان کا کہناتھا کہ مرکزمیں نئی ذمہ داری دیتے وقت اعتمادمیں نہیں لیاگیا،پارلیمانی سیکرٹری بنانے سے پہلے رائے نہیں لی گئی۔واضح رہے کہ اس سے پہلے سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے رکن قومی اسمبلی راجہ ریاض کی جانب سے مسلم لیگ (ن) کی قیادت کیخلاف نازیبا الفاظ کے استعمال پر انہیں انتباہ جاری کیا ہے کہ آئندہ اس طرح کے الفاظ استعمال کئے تو ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔  قومی اسمبلی میں وقفہ سوالات کے آغاز پر پاکستان تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی راجہ ریاض نے مسلم لیگ (ن) کی قیادت کے خلاف آوازیں کسنی شروع کیں جس پر وزیر دفاع پرویز خٹک نے کہا کہ ہم نے ایوان چلانا ہے اس کو ڈرامہ نہ بنائیں،جو بھی اس کی خلاف ورزی کرے گا اس کے خلاف ایکشن لیا جائے۔ سپیکر اسد قیصر نے کہا کہ میں ایسے ارکان کے خلاف کارروائی کروں گا۔ رانا تنویر حسین نے کہا کہ ہم نے ہاؤس بزنس ایڈوائزری کمیٹی کے اجلاس میں یہ یقین دہانی کرائی تھی کہ ایوان کی کارروائی اچھے انداز میں چلانے میں تعاون کریں گے۔ وزیراعظم نے وفاقی وزیر پرویز خٹک کو ایوان کی کارروائی بہتر انداز میں چلانے کے لئے فوکل پرسن مقرر کیا تھا تاہم حکومتی ارکان خود اس کی خلاف ورزی کرتے ہیں۔ سپیکر نے راجہ ریاض کو خبردار کیا کہ ایسا دوبارہ کیا تو ان کے خلاف کارروائی کریں گے۔سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے رکن قومی اسمبلی راجہ ریاض کی جانب سے مسلم لیگ (ن) کی قیادت کیخلاف نازیبا الفاظ کے استعمال پر انہیں انتباہ جاری کیا ہے کہ آئندہ اس طرح کے الفاظ استعمال کئے تو ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ پیر کو قومی اسمبلی میں وقفہ سوالات کے آغاز پر پاکستان تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی راجہ ریاض نے مسلم لیگ (ن) کی قیادت کے خلاف آوازیں کسنی شروع کیں جس پر وزیر دفاع پرویز خٹک نے کہا کہ ہم نے ایوان چلانا ہے اس کو ڈرامہ نہ بنائیں، جو بھی اس کی خلاف ورزی کرے گا اس کے خلاف ایکشن لیا جائے۔

موضوعات:

loading...