فیصلہ سازی اور تجربے کا فقدان ،پی ٹی آئی حکومت یوٹرنز سے جان نہ چھڑا سکی آج صبح کیا گیا بڑا فیصلہ اچانک واپس ، یہ فیصلہ کیا تھا؟ وزیر مملکت داخلہ شہریار آفریدی نے حیران کن اعلان کر دیا

  بدھ‬‮ 10 اکتوبر‬‮ 2018  |  14:53

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)تحریک انصاف کی وفاقی حکومت نے ایک بار پھر یوٹرن لیتے ہوئے ایس ایس پی آپریشنز اسلام آباد سید امین بخاری کو تبدیل کرنے کا فیصلہ واپس لیتے ہوئے اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کو خط لکھ دیا، امین بخاری کو خدمات جاری رکھنے کا حکم۔ تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کی حکومت نے ایک بار پھر یوٹرن لیتے ہوئے ایس ایس پی آپریشنزاسلام آبادسید امین بخاری کو تبدیل کرنے کا فیصلہ بدل لیا ہے اور انہیں خدمات جاری رکھنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ واضح رہے کہ آج صبح وزارت داخلہ سے ایک نوٹیفکیشن جاری کیا گیا تھا جس میں

ایس ایس پی آپریشنز اسلام آباد سید امین بخاری کو ایس ایس پی آپریشنز کے عہدے سے ہٹا کر ایس ایس پی میاں سعید کو عہدہ دئیے جانیکا کہا گیا تھا تاہم اب وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی نے اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کو ایک خط لکھا ہے کہ جس میں ایس ایس پی آپریشنز اسلام آباد سید امین بخاری کو تبدیل کرنے کا فیصلہ واپس لینے اور انہیں خدمات جاری رکھنے کا کہا گیا ہے ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق پہلے جاری کئے گئے نوٹیفکیشن کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ وہ نوٹیفکیشن وزارت داخلہ کے سیکشن افسر کی جانب سے لکھا گیا تھا۔ وزیر مملکت شہریار آفریدی کی جانب سے اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کو لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ سید امین بخاری کے ریگولر ایس ایس پی آپریشنز اسلام آباد کا نوٹیفکیشن جاری کیا جائے۔ واضح رہے کہ وفاقی وزارت داخلہ نے ایس ایس پی آپریشن اسلام آباد امین بخاری کو تبدیل کرتے ہوئے اسٹیبلشمنٹ ڈویژن سے ایس ایس پی میاں سعید کی خدمات طلب کر لی تھیں۔ اس حوالے سے وزارت داخلہ نے اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کو خط لکھ گیا تھا۔ واضح رہے کہ ایس ایس پی میاں سعید نے خیبرپختونخواہ باچا خان یونیورسٹی کے مشہورمشال قتل کیس کی تحقیقات کی تھیں۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں