’’فوج عمران خان پر خوش بھی ہے اور حیران بھی‘‘ فوجی قیادت وزیراعظم عمران خان کی کس بات پر حیران ہے؟تفصیلات سامنے آگئیں

  جمعہ‬‮ 14 ستمبر‬‮ 2018  |  16:40

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) فوجی قیادت وزیراعظم عمران خان پر خوش بھی اور حیران بھی ۔خوشی اس بات کی ہے کہ پاکستان کوئی وزیراعظم تو ایسا آیا جسے قومی سلامتی کی فکر ہے اور حیرت اس بات کی ہے کہ وزیراعظم عمران خان دنیا کی سیاست کو کس قدر زیادہ سمجھتے ہیں ۔ معروف صحافی و کالم نگار مظہر برلاس اپنے کالم میں لکھتے ہیں کہ دو روز پہلے وزیر اعظم پاکستان عمران خان اپنے چند وزراء کے ساتھآئی ایس آئی ہیڈ کوارٹر گئے جہاں انہیں ایک بھرپور بریفنگ دی گئی۔ اس بریفنگ کا دورانیہ آٹھ گھنٹے پر مشتمل تھا۔

اس سے قبل جو بریفنگ جی ایچ کیو میں دی گئی تھی اس کا دورانیہ بھی کم و بیش آٹھ گھنٹے ہی تھا۔ان دونوں بریفینگز کے بعد فوجی قیادت خوش بھی ہے اور حیران بھی۔ انہیں خوشی اس بات کی ہے کہ کوئی تو وزیر اعظم ایسا آیا جسے قومی سلامتی کی فکر ہے جو اتنی دلچسپی سے قومی سلامتی کے امور پر بریفنگ لے رہا ہے ۔ انہیں حیرت اس بات پر ہے کہ وزیر اعظم دنیا کی سیاست کو کس قدر زیادہ سمجھتے ہیں اور جنگی معاملات میں کتنی گہری دلچسپی لیتے ہیں۔ جس دن جی ایچ کیو میں بریفنگ ہو رہی تھی تو وزیر اعظم عمران خان نے سب سے زیادہ سوالات اس وقت کئے جب انہیں ڈی جی ایم او یعنی ڈائریکٹر جنرل ملٹری آپریشنز بریفنگ دے رہے تھے۔باقی فوجی افسران کے ساتھ ساتھ ڈی جی ملٹری آپریشن جنرل شمشاد ساحر مرزا کو بھی حیرت ہو رہی تھی کہ وزیر اعظم جنگی حکمت عملیوں میں نہ صرف دلچسپی رکھتے ہیں بلکہ انہیں سمجھنے کی بھرپور کوشش بھی کرتے ہیں۔ سوالات کا یہ سلسلہ دیکھ کر فوجی قیادت بہت خوش ہوئی۔ جنرل شمشاد ساحر مرزا، جو اس وقت ڈی جی ملٹری آپریشنز ہیں، بڑے قابل افسر ہیں۔ ان کے کزن جنرل شاہد بیگ مرزا چند ہفتے پہلے تک کور کمانڈر کراچی تھے۔ یہ دونوں مہلال مغلاں کے رہنے والے ہیں۔ یہ قصبہ چکوال سے راولپنڈی کی طرف آئیں تو چکوال اور گوجر خان کے درمیان ہے۔آئی ایس آئی کے ہیڈ کوارٹر میں بھی دی گئی بریفنگ جی ایچ کیو کیطرح خاصی طولانی تھی۔ اس بریفنگ میں بھی وزیر اعظم نے سوالات کئے۔ امریکی رینکنگ کےمطابق آئی ایس آئی دنیا کی نمبر ون ایجنسی ہے جبکہ بھارتی خفیہ ایجنسی را کا ساتواں آٹھواں نمبر ہے۔ اسی طرح گزشتہ کئی سالوں سے دنیا میں جو فوجی مقابلے ہو رہے ہیں پاک فوج کے جوان پہلی پوزیشن حاصل کر رہے ہیں۔ یہ سب پاکستان پر اللہ تعالیٰ کا کرم ہے۔ان دونوں بریفینگز میں بہت کچھ زیر بحث آیا، وزیر اعظم عمران خان کیپرکشش شخصیت نے فوجی قیادت کو بہت متاثر کیا۔اسی لئے تو انہیں اتنے سیلوٹ کئے گئے ، شاید یہ لمبے عرصے کے بعد پہلا موقع ہے کہ پاکستان کی سول و ملٹری قیادت ایک پیج پر ہیں۔ شاید اسی لئے وزیر اطلاعات چوہدری فواد حسین کہتے ہیں کہ ’’سول و ملٹری قیادت صرف ایک پیج ہی پر نہیں، ایک کتاب پر ہیں یہ کتاب پاکستان سے محبت ہے‘‘۔خواتین و حضرات !اس سے قبل بھی وزرائے اعظم کو بریفنگ دی جاتی تھی مگران کیعدم دلچسپی کے باعث فوجی قیادت کو بریفنگ مختصر کرنا پڑتی تھی، ایک وزیر اعظم صاحب تو زیادہ زور لسی پینے پر رکھتے تھے۔ ایک بریفنگ کے دوران تو ایک وزیر اعظم نے یہ کہنا شروع کر دیا تھا کہ سینڈوچ بڑے مزے دار ہیں، ہمارا کک کیوں ایسے سینڈوچ تیار نہیں کر پاتا۔ بس یوں سمجھ لیجئے کہ کسی کو صرف کھانے سے دلچسپی تھی اور کسی کو ملکی سلامتی سے بہت دلچسپی ہے اسی لئے بریفینگز طول پکڑ جاتی ہیں

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں