کراچی میں 6سالہ بچی زیادتی کے بعد قتل،شہری سڑکوں پر نکل آئے ،شدید احتجاج ،پولیس نے سیدھی گولیاں چلا دیں،قیمتی جانی نقصان،حالات کشیدہ

  منگل‬‮ 17 اپریل‬‮ 2018  |  9:19

کراچی(سی پی پی )اورنگی ٹائون میں 6 سالہ بچی کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کردیا گیا جبکہ واقعے کے خلاف احتجاج کرنے والے مظاہرین پر پولیس نے سیدھی فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں ایک شخص جاں بحق اور12زخمی ہوگئے ہیں جن میں سے 2کی حالت تشویشناک ہے۔ایک نجی ٹی وی کے مطابق کراچی کے علاقے اورنگی ٹائونمیں بچی کو زیادتی و اغوا کے بعد قتل کردیا گیا۔ بچی کی لاش کچرا کنڈی سے ملی جس کی شناخترابعہ کے نام سے ہوئی۔ پولیس کے مطابق رابعہ کی عمر 6 سال اور بلوچ پاڑہ کی رہائشی ہے۔ بچی

کے والد کے بیان کے مطابق رابعہ 15 اپریل اتوار کو گھر سے کھیلنے نکلی اور اس کے بعد لاپتہ ہوگئی۔والد نے اورنگی ٹان میں گمشدگی کا مقدمہ درج کرا کے 3 افراد کو نامزد کیا جن میں سے 2 ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا تاہم آج صبح بچی کی لاش کچرا کنڈی سے برآمد ہوئی جس کے بعد بچی کے لواحقین اور اہل علاقہ کی بڑی تعداد گھروں سے نکل آئی۔ پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلیے آنسو گیس کی شیلنگ کی اور ان پر براہ راست فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں 12 افراد زخمی ہوگئے۔ زخمیوں کو انتہائی تشویش ناک حالت میں جناح اسپتال منتقل کیا گیا جہاں ایک شخص زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہوگیا۔ مقتول کی شناخت عبدالرحمان کے نام سے ہوئی جس کے سر پر گولی لگی۔پولیس فائرنگ پر مظاہرین مشتعل ہوگئے اور انہوں پولیس پر شدید پتھرا کردیا جس کے نتیجے میں علاقہ میدان جنگ بن گیا ہے جب کہ پولیس علاقے سے فرار ہوگئی ہے۔ مشتعل افراد نے کئی گاڑیوں کے شیشے بھی توڑ دیے ہیں۔ایس ایس پی ویسٹ کے مطابق بچی کے والد کی جانب سےنامزد کئے گئے 3 ملزمان میں سے 2 کو گرفتار کرلیا گیا ہے جبکہ بچی کی لاش کے ڈی این اے نمونے بھی لئے جاچکے ہیں تاکہ رپورٹ میں زیادتی کی تصدیق ہوسکے۔ ملزمان کا تیسرا ساتھی فرار ہے جس کی تلاش جاری ہے اور چھاپے مارے جارہے ہیں۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں