چیئرمین نادرا عثمان مبین بھیس بدل کر نادرا آفس کی لائن میں لگ گئے، عملے نے ان کے ساتھ کیا سلوک کیا؟ حیرت انگیز صورتحال، بڑے بڑوں کی شامت آ گئی

  ہفتہ‬‮ 24 فروری‬‮ 2018  |  18:23

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) چیئرمین نادرا عثمان مبین نے عوامی شکایات پر عام آدمی کا روپ دھار کر مختلف سینٹرز کا دورہ کیا جہاں انہوں نے عملے کے ناروا رویہ کو خود دیکھا، اس موقع پر انہوں نے نادرا کی ایک خاتون ملازمہ اور دو افسران کو معطل کر دیا۔ ایک نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق چیئرمین نادرا عثمان مبین کچھ ماہ پہلے ہی کھولے جانے والے سائٹ نادرا میگا سینٹرز پر قطار میں کھڑے ہو کر کاؤنٹرز تک پہنچے جہاں دو کاؤنٹرز پر عملہ ہی موجود نہیں تھا۔ جب عثمان مبین نے شناختی کارڈ کے لیے درخواست

دی تووہ مسترد کر دی گئی۔ اس موقع پر چیئرمین نادرا عثمان مبین نے عملہ کی عدم حاضری اور شہریوں سے ناروا سلوک پر دو افسران کو معطل کر دیا۔ جب چیئرمین نادرا لیاقات آباد نادرا سینٹر پہنچے تو وہاں انہوں نے دیکھا کہ نادرا کی خاتون افسر شاہین اختر نے ایک لاڑکانہ سے آئے ہوئے شہری کا شناختی بنانے سے انکار کر دیا، جب چیئرمین نادرا نے خاتون افسر کا شہری کے ساتھ یہ رویہ دیکھا تو اسے نوکری سے برطرف کر دیا، چیئرمین نادرا نے اس موقع پر کہا کہ پاکستان کا شہری ملک کے کسی بھی نادرا سینٹر سے شناختی کارڈ بنوا سکتا ہے۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں