تحریک لبیک کا دھرنا ،اسلام آباد پولیس نے شرکاء کو گھیرے میں لے لیا،راولپنڈی انتظامیہ کاصاف انکار

  منگل‬‮ 14 ‬‮نومبر‬‮ 2017  |  10:23

اسلام آباد (آن لائن) دھرنے کے شرکا کو منتشر کرنے کے لئے پنجاب اور وفاق کے درمیان ٹھن گئی راولپنڈی کی حدود میں آنے والے مظاہرین کو پنجاب حکومت نے اٹھانے سے انکار کردیا اسلام آباد انتظامیہ بے بس ہوکر رہ گئی تفصیلات کے مطابق وفاقی دارلحکومت اور پنجاب کے سنگم پر بیٹھے تحریک لبیک کے دھرنے کے شرکاء کو منتشر کرنے کے لئے اسلام آباد انتظامیہ اور راولپنڈی کی انتظامیہ نے ایک دوسرے کا منہ تکنا شروع کردیاہےدونوں شہروں کی انتظامیہ چاہتی ہے کہ مظاہرین کو منتشر کرنے کے انہیں ایکشن نہ لینا پڑے اس وجہ سے دونوں شہروں

کے کمشنرز کوئی بھی کارروائی کرنے سے گریزاں نظر آتے ہیں دھرنا انتظامیہ نے اس بات کو پلان کرکے مدنظر رکھا تھا کہ ان کے شرکاء کی کچھ تعداد راولپنڈی کی حدود میں بیٹھے گی جبکہ کچھ تعداد اسلام آباد کی حدود میں موجود رہے اس طرح دونوں شہروں میں کسی بھی ایک ضلعی انتظامیہ کو آپریشن کرنے میں مشکلات پیش آئیں گی اور دھرنے کو طول دینا آسان ہوجائے گا ذرائع نے یہ بھی بتایا ہے کہ اسلام آباد انتظامیہ نے راولپنڈی کی انتظامیہ سے رابطہ کرکے انہیں آپریشن کرنے کے لئے کہا تو راولپنڈی انتظامیہ نے یہ کہہ کر انکار کردیا کہ دھرنے کے بیشتر شرکاء اسلام آباد کی حدود میں موجود ہیں اور وہ اسلام آباد میں ہی داخل ہونا چاہتے ہیں اس صورتحال اور راولپنڈی انتظامیہ کے انکار کے بعد اسلام آباد انتظامیہ بالکل بے بس ہوکررہ گئی ہے جس کی وجہ سے تحریک لبیک کے دھرنے کو طوالت مل رہی ہے دوسری جانب اسلام آباد پولیس نے اپنی حدود میں دھرنے کے شرکاء کا گھیراؤ بھی کررکھا ہے تاہم تاحال کوئی آپریشن شروع نہیں کیا گیا واضح رہے کہ تحریک لبیک کارکنان نے مولانا خادم حسین رضوی کی قیادت میں گزشتہ ایک ہفتے سے جڑواں شہروں کے سنگم پر دھرنا دے رکھا ہے اور اپنے مطالبات کے منظوری تک وہاں سے اٹھنے سے انکار کررکھا ہے جس کے باعث اسلام آباد اور راولپنڈی کے شہریوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں