ن لیگ کا شیرازہ بکھر گیا،دو وزرا سمیت درجنوں ارکان اسمبلی نے نواز شریف کیخلاف بغاوت کااعلان کر دیا

  جمعہ‬‮ 20 اکتوبر‬‮ 2017  |  15:15

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)نواز شریف کی پالیسیوں سے نالاں ارکان پنجاب اسمبلی کے فارورڈ گروپ کی تیاری، ایم پی اے شوکت لالیکا کے گھر رات گئے درجنوں ارکان صوبائی اسمبلی کا اجلاس، دو صوبائی وزرا سمیت ایک پارلیمانی سیکرٹری کی بھی شرکت، شہباز شریف کے پارٹی ٹیک اوور کی حمایت کا اعلان۔ تفصیلات کے مطابق ن لیگ میں دھڑا بندی اور ٹوٹ پھوٹکی خبروں کے بعد نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کی ایک رپورٹ کے مطابق پنجاب کے درجنوں اراکین صوبائی اسمبلی نے نواز شریف کے خلاف بغاوت کر دی ہے اور پارٹی میں فارورڈ بلاک کیلئے رات گئے

رکن صوبائی اسمبلی شوکت لالیکا کے گھر ان اراکین اسمبلی کا ایک اجلاس منعقد ہوا ہے جس میں دو صوبائی وزرا سمیت ایک پارلیمانی سیکرٹری نے بھی شرکت کی ہے۔ ن لیگ کی جانب سے اراکین صوبائی اسمبلی کے اس اجلاس کو صوبائی وزیر برائے محنت راجہ اشفاق سرور کی حج سے واپسی پر استقبالیہ کی تقریب قرار دیا جا رہا ہے۔ فارورڈ بلاک کیلئے اراکین صوبائی اسمبلی کے اس اجلاس میں نواز شریف اور مریم نواز کے بیانات اور پالیسیوں کے خلاف اراکین نے کھل کر اپنے خدشات اور تحفظات کا اظہار کیا۔ اجلاس میں اس بات پر اتفاق کیا گیا ہے کہ شہباز شریف آگے بڑھ کر ن لیگ کی باگ ڈور سنبھال لیں۔واضح رہے کہ اس سے قبل ن لیگ میں 50ارکان اسمبلی اور 40ارکان اسمبلی کے دو گروپوں سے متعلق خبریں میڈیا کی زینت بن چکی ہیں جن میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ یہ دونوں گروپ کسی بھی وقت منظر عام پر آتے ہوئے قیادت کی عدلیہ اور فوج کے خَلاف پالیسیوں پر بغاوت کر سکتے ہیں۔ شوکت لالیکا کے گھر ہونے والے اجلاس میں ارکان اسمبلی نے انہی امور پر اپنے تحفظات کا اظہار کیا ہے۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں