داعش کا سفاک اور خطرناک ترین یہ جلاد عرب ملک میں گرفتار ہوا مگر گرفتاری کے چند منٹ بعد ہی کیسے آرام سے چلتا ہوا جیل سے نکل گیا؟جان کر آپ کا حیرت سے منہ کھلا کا کھلا رہ جائے گا

  جمعہ‬‮ 12 جنوری‬‮ 2018  |  13:30

بغداد(مانیٹرنگ ڈیسک)عراق میں شدت پسند تنظیم داعش کا ایک انتہائی خطرناک ترین رہنما اپنی گرفتاری کے چند ہی منٹ بعد آرام سے چلتا ہوا جیل سے نکلا گیا۔ غیر ملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق سفید داڑھی والا شدت پسندجس کا نام ابو عمر ہے داعش کا سفاک اور خطرناک ترین جلاد تھا جو درجنوں افراد کے سر قلم کر چکا تھا گزشتہ روز عراقی شہر موصل میں گرفتار کر لیا گیا تھا لیکن اب انکشاف ہوا ہے کہ سکیورٹی اہلکاروں نے رشوت لے کر اسے چھوڑ دیا ہے۔بو عمر نے ان عراقی آفیسرز کو ساڑھے 5ہزار پاؤنڈ (تقریباً

8لاکھ 20ہزار روپے) رشوت دی، جنہوں نے اسے موصل کے پولیس سٹیشن میں قید کیا تھا۔ جب اسے حراست میں لیا گیا تو وہ اپنی موٹر بائیک پیچھے چھوڑ کر گیا لیکن کچھ ہی دیر بعد وہاں سے بائیک غائب تھی جس پر معلوم کرنے پر پتہ چلا کہ اس شخص کو رہا کر دیا گیا ہے اور وہ اپنی بائیک لے کر جا چکا ہے۔واضح رہے کہ ابو عمر داعش کی لوگوں کو موت کے گھاٹ اتارنے کی کئی ویڈیوز اور تصاویر میں موجود ہوتا تھا۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں