صرف ایک ہفتے میں کتنے روہنگیا مسلمان بنگلہ دیش پہنچے؟تمام باتیں غلط ثابت،حیرت انگیزانکشاف

  بدھ‬‮ 11 جنوری‬‮ 2017  |  19:56

نیویارک(این این آئی)اقوام متحدہ نے کہاہے کہ گزشتہ ہفتے قریب بائیس ہزار روہنگیا مسلمان میانمار میں جاری پرتشدد کارروائیوں کی وجہ سے فرار ہو کر بنگلہ دیش میں پناہ لینے پر مجبور ہوئے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کی جانب سے بتایا گیا کہ میانمار کی شورش زدہ ریاست راکھین سے فرار ہو کر بنگلہ دیش میں پناہ لینے والے روہنگیا مسلمانوں کی تعداد میں اضافہ دیکھا گیا ہے۔اقوام متحدہ کے رابطہ دفتر برائے ہیومینیٹیرین امور کی جانب سے جاری کردہ ہفتہ وار رپورٹ میں بتایا گیا کہ گزشتہ برس اکتوبر سے اب تک راکھین سے فرار ہو کر

بنگلہ دیش پہنچنے والے روہنگیا مسلمانوں کی تعداد 65 ہزار تک پہنچ چکی ہے۔رپورٹ کے مطابق پانچ جنوری تک میانمار سے بنگلہ دیش میں پناہ لینے والے افراد کی تعداد 65 ہزار ہے اور اس میں روز بہ روز اضافہ دیکھا جا رہا ہے۔ اس رپورٹ کے مطابق بنگلہ دیش پہنچنے والے یہ روہنگیا افراد مختلف عارضی مہاجر کیمپوں، خیمہ بستیوں اور مقامی افراد کے گھروں پر پناہ لینے پر مجبور ہیں۔یہ رپورٹ ایک ایسے موقع پر سامنے آئی ہے، جب اقوام متحدہ کے مندوب برائے انسانی حقوق ینگی لی بارہ روز تحقیقاتی دورے پر میانمار پہنچے ہیں۔انسانی حقوق کی تنظیموں کا الزام ہے کہ میانمار کی فوج روہنگیا مسلمانوں کے قتل عام، لوٹ مار اور جنسی زیادتیوں میں ملوث ہے۔ یہ بات اہم ہے کہ گزشتہ برس اکتوبر میں میانمار کی فوج نے راکھین ریاست میں اپنے نو فوجیوں کے قتل کے بعد کریک ڈاؤن کا آغاز کیا تھا۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

روزانہ کی دس بڑی خبریں بذریعہ ای میل حاصل کریں

بذریعہ ای میل آپ کو دس بڑی خبروں کے ساتھ ساتھ کرنسی اور سونے کے ریٹس بھی بھیجے جائیں گے۔